July 14, 2024

اردو

اردو

کلیسیا کو بیماروں کی خاص دیکھ بھال کرنے کی کیوں ضرورت ہے؟

کلیسیا کو بیماروں کی خاص دیکھ بھال کرنے کی کیوں ضرورت ہے؟ - بیماروں کی دیکھ بھال

کلیسیا کو بیماروں کی خاص دیکھ بھال کرنے کی کیوں ضرورت ہے؟

یسوع مسیح ہمیں یہ ظاہر کرتے ہیں کہ جب ہم مشکلات برداشت کرتے ہیں تو آسمان کی بادشاہی بھی ہمارے ساتھ تکلیف میں ہوتی ہے۔ خُدا چاہتا ہے کہ اُسے پھِر سے جانا جائے جس کے بارے میں انجیل مقدس میں بھی ہے:

متّی 25 باب 40 آیت: ” بادشاہ جواب میں اُن سے کہے گا مَیں تُم سے سچ کہتا ہُوں کہ جب تُم نے میرے اِن سب سے چھوٹے بھائِیوں میں سے کِسی کے ساتھ یہ سلُوک کِیا تو میرے ہی ساتھ کِیا “۔

اِسی لئے یسوع مسیح نے بیماروں کی دیکھ بھال کو اپنے شاگِردوں کے لئے ضروری کام کے طور پر تیار کیا۔ وہ اُنہیں حُکم دیتے ہیں کہ:

متّی 10 باب 8 آیت: ” بِیماروں کو اچھّا کرنا۔ مُردوں کو جِلانا۔ کوڑِھیوں کو پاک صاف کرنا۔ بدرُوحوں کو نِکالنا۔ تُم نے مُفت پایا مُفت دینا “۔

اور وہ اُن سے الہٰی اِختیار کا وعدہ کرتے ہیں:

مرقس 16 باب 17 سے 18 آیات: ” اور اِیمان لانے والوں کے درمِیان یہ مُعجِزے ہوں گے۔ وہ میرے نام سے بدرُوحوں کو نِکالیں گے۔ نئی نئی زبانیں بولیں گے۔ سانپوں کو اُٹھا لیں گے اور اگر کوئی ہلاک کرنے والی چِیز پِئیں گے تو اُنہیں کُچھ ضرر نہ پُہنچے گا۔ وہ بِیماروں پر ہاتھ رکھّیں گے تو اچھّے ہو جائیں گے “۔

مسیحیت کی مخصوص خصوصیات ہمیشہ سے یہ رہی ہیں کہ بزرگ، بیمار اور ضرورت مندہ اِس میں سب سے اہم ہیں۔ ماں ٹریسا، جنہوں نے اُن سب کی دیکھ بھال کی جو کلکتہ میں مر رہے تھے، وہ آج تک مسیحی عورتوں اور مردوں میں واحد مسیحی ہیں جنہوں نے مسیح کو مکمل طور پر اُن لوگوں میں دریافت کیا جنہیں دوسروں کی طرف سے کوئی اہمیت نہیں ملی اور جن کو سب سے دور بھی کیا گیا۔ جب مسیحی حقیقی مسیحی بن جاتے ہیں، تو شفا کے آثار اُن میں سے باہر نکلتے ہیں۔ یہاں تک کہ کُچھ لوگوں کے پاس شفا کا تحفہ ہے تو باقی جسمانی طور پر رُوحُ القُدس کی قوت میں ہیں ( جسے شفا کا الہٰی تحفہ بھی کہتے ہیں )۔

خُداوند آپ سب کو اپنی تمام برکات سے نوازے اور آپ سب کو زندگی کی تمام مشکلات سے دور رکھے۔ آپ یوں ہی خُدا کے فضل سے اپنی زندگیوں میں ترقی کرتے جائیں اور یسوع مسیح کے احکام پر عمل کریں۔ یسوع مسیح کے جلالی اور بابرکت نام میں آمین!

Facebook
Twitter
LinkedIn

RELATED ARTICLES